یہ دھرنا مسلسل آٹھ روز تک کامیابی کیساتھ جاری رہا جس میں صوبہ بھر کے سیاسی و سماجی کارکنوں اور مختلف مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد نے بھرپور انداز میں شرکت کی۔ خاص طور پر رکشہ اور ٹیکسی ڈارئیوروں کی ایک بڑی تعداد اس دھرنے میں شریک تھی

0
0
0
s2smodern

کسی بھی لڑائی کو جیتنے کے لیے جہاں اس لڑائی کے داؤ پیچ پر عبور کی ضرورت ہوتی ہے وہیں دشمن کی ممکنہ چالوں کو قبل از وقت بھانپ لینا بھی اہمیت کا حامل ہوتا ہے تاکہ یہ سمجھا جائے کہ کونسا داؤ کب کارگر ہو سکتا ہے۔تحریک کے حالیہ مرحلے پر ریاست کے لیے تحریک پر براہِ راست حملہ کرنا اتنا آسان نہیں ہے

0
0
0
s2smodern

ان بدترین سیاسی، معاشی وسماجی حالات کا شکار سماج کا جزو اول یعنی خواتین ہیں جن کو عقل و شعور اور جسمانی طاقت کے لحاظ مرد سے کمتر سمجھا جاتا ہے اسی بنا پر ان کوبورژوا دانشور نام تو صنف نازک کا دیتے ہیں 

0
0
0
s2smodern

پشتون تحفظ تحریک جو گزشتہ دو ماہ سے منظر عام پر آئی ہے، اس وقت اپنے عروج پر ہے۔ کراچی میں نوجوان نقیب محسود کے ماورائے عدالت قتل نے فاٹا کے عوام میں ایک طویل وقت سے پلنے والے غم و غصے میں ایک نیا ابال پیدا کیا اور عوام نے اس قتل پر ریاستی مؤقف کو ماننے سے انکار کر دیا

0
0
0
s2smodern

مارکسزم دنیا کی واحد سائنس ہے جس نے تاریخ میں پہلی مرتبہ عورت کے استحصال کی مادی اور تاریخی بنیادوں کو واضح کیا۔ اس سے پیشتر اور اس کے بعد کے تمام فلسفے اور سماجی علوم عورت کی آزادی اور عورت کے تاریخی کردار کو خیال پرستانہ نقطہ نظر سے پرکھتے تھے چاہے وہ مذہبی علوم ہوں یا جدید سماجی علوم۔ خواتین پر جبر کو ہمیشہ ایک اخلاقی مسئلہ بنا کر پیش کیا گیا۔ 

0
0
0
s2smodern

جنوری میں وزیر نجکاری دانیال عزیزنے اعلان کیا کہ حکومت 15 اپریل سے پہلے پی آئی اے کی نجکاری کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ اس وقت تک پی آئی اے کے فلائنگ شعبے کو باقی شعبہ جات سے علیحدہ رکھا جائے گا اور پھر اعلان کردہ تاریخ تک نجکاری کر دی جائے گی

0
0
0
s2smodern

سرمایہ دارانہ نظام جہاں باقی زندگیوں کے لیے ایک خطرناک سرطان کی صورت اختیار کر چکا ہے وہیں پر عورت کے استحصال کا سوال بھی بہت اہمیت اختیار کر چکا ہے۔ عورت کے استحصال پر سوال تو بہت ہیں لیکن اس نظام میں جواب نداردہیں۔ آخر کون دے گاان سوالوں کے جواب

0
0
0
s2smodern

کوئٹہ کے عظیم الشان جلسے کے بعد 8اپریل کوپشاور میں جلسہ منعقد کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ ریاستی جبرکے خلاف اس ابھرتی تحریک کو ملنے والی عوامی حمایت سے ریاستی ادارے خوف اور بوکھلاہٹ کا شکار ہیں جس کے بعد سے تحریک کے رہنماؤں اور کارکنان کوگرفتار، جبری غائب اور ان کے خلاف ایف آئی آر درج کی جارہی ہیں

0
0
0
s2smodern

نقیب اللہ محسود کے قتل کیخلاف ابھرنے والی تحریک تھمنے کی بجائے تیزی سے پھیل رہی ہے۔ کراچی میں راؤ انوار جیسے خونی درندے کے ہاتھوں اس بہیمانہ قتل کے بعد ابھرنے والی یہ تحریک پشتونخوا اور بلوچستان کے وسیع حصوں تک پھیل گئی تھی۔ اسلام آباد میں کئی روز تک جاری رہنے والے دھرنے میں ہزاروں افراد نے

0
0
0
s2smodern

پاکستان کی ریاست کے فوجی جبر کے خلاف پشتون عوام کی پھیلتی ہوئی تحریک نے ریاست کی بنیادوں کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ نقیب اللہ محسود کے ریاستی قتل کے خلاف ڈیرہ اسماعیل خان سے شروع ہونیوالا چھوٹا قافلہ منظور پشتین کی قیادت میں اب ایک بہت بڑی تحریک میں تبدیل ہو چکا ہے 

0
0
0
s2smodern

ہم سال 2018ء میں محنت کش خواتین کا عالمی دن انتہائی غیر معمولی حالات میں منانے کی طرف جا رہے ہیں۔ سرمایہ دارانہ بحران کے دس سالوں نے دنیا کا نقشہ بدل کر رکھ دیا ہے، بحران سے پہلے سیاسی افق پر سکوت ایک معمول تھا، لیکن دس سال سے جاری اس معاشی بحران میں تحریکیں اور بغاوتیں ایک نیا معمول بن چکی ہیں

0
0
0
s2smodern