حالیہ مہینوں میں مزدوروں اور طلبہ کے اکٹھ کی سرمایہ نواز چینی ریاست کیخلاف جدوجہد زور پکڑتی جا رہی ہے۔ سرگرم طلبہ کے خلاف خوفناک کریک ڈاؤن اس کی واضح جھلک ہے۔اگرچہ کریک ڈاؤن کی وجہ مقامی JSAIC فیکٹری مزدوروں کی ایک حقیقی آزاد ٹریڈ یونین کی جدوجہد تھی

0
0
0
s2smodern

افغانستان گزشتہ 40 سالوں سے عالمی اور علاقائی سامراجیوں کے سامراجی عزائم کی وجہ سے ظلم و بربریت، وحشت، تباہی اور دہشت گردی کی آماجگاہ بنا ہوا ہے۔ وہاں ہر روز ظلم اور بربریت کی ایک نئی داستان رقم ہوتی ہے، جس میں ہمیشہ کی طرح مظلوم اور معصوم عوام برباد ہوتے ہیں

0
0
0
s2smodern

وادی کشمیر اس وقت تاریخ کی سب سے سرکش اور طاقتور بغاوت کی لپیٹ میں ہے۔ وادی کے درجنوں مختلف علاقوں سے طلبہ کے مظاہروں سمیت بڑے احتجاجی جلسوں اور ریلیوں کی خبریں موصول ہو رہی ہیں 

0
0
0
s2smodern

ماجھی لہجہ پنجابی زبان کا معیاری لہجہ ھے جوکہ مشرقی پنجاب اور مغربی پنجاب کے دونوں حصوں میں پنجابی لکھنے کے لیے بنیادی زبان ھے۔ جبکہ پنجابی زبان کا جھنگوچی  یا رچنوی لہجہ  پنجابی کا سب سے پرانا لہجہ ھے اور اسے اصل پنجابی لہجہ اور ٹھیٹھ پنجابی لہجہ بھی کہا جاتا ھے۔ 

0
0
0
s2smodern

نوآبادیاتی انقلابات کے نتیجے میں دنیا کی بیشتر محکوم اقوام نے براہ راست غلامی سے نجات حاصل کی اور صدیوں سے گلے میں پڑے غلامی کے طوق کو اتار پھینکا۔

0
0
0
s2smodern

دو طالب علم ہلاک اور درجنوں لوگ زخمی ہوگئے۔ تب سے ڈھاکہ کے مختلف علاقوں سے لے کر آس پاس کے شہروں، جیسے تنگیل اور نارائن گنج، کو جانے والی سڑکوں پر طالب علم انصاف اور محفوظ سڑکوں کا مطالبہ لے کر احتجاج کر رہے ہیں۔

0
0
0
s2smodern

ایسٹ انڈیا کمپنی کے نام سے تجارت کی غرض سے شروع ہونے والے برطانوی سامراج کے غلبے کی دو سو سالہ خونریز تاریخ نے اس خطے کی قدیم تہذیب اور ثقافت کوخون میں ڈبودیا۔

0
0
0
s2smodern

طلبہ کے اس احتجاج نے پورے ڈھاکہ شہر کو جام کر کے رکھ دیا ہے۔ طلبہ محفوظ ٹرانسپورٹ کے نظام کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ابتدا میں یہ احتجاجی مظاہروں تک محدود تھا لیکن بعد ازا ں حکومت کی طرف سے کسی مناسب یقین دہانی نہ ہونے کی وجہ سے طلبہ نے 4اگست سے ڈھاکہ شہر کا ٹریفک کا نظام اپنے ہاتھ میں لینے کا فیصلہ کیا

0
0
0
s2smodern

برصغیر کی تقسیم کے بعد سے اب تک کشمیرپاکستان اور بھارت دونوں ریاستوں کے بیچ پس رہا ہے۔ ایک اسے شہ رگ گردانتا ہے تو دوسرا اٹوٹ انگ

0
0
0
s2smodern

پچھلے کچھ عرصے سے جنوبی ایشیا اور اس کے گردو نواح میں علاقائی اور عالمی سامراجی ریاستوں کے مابین تعلقات میں تیز ترین تبدیلیاں رونما ہورہی ہیں۔ ماضی کے اتحاد ٹوٹ رہے ہیں اور ’’نئی دوستیاں‘‘ ان کی جگہ لے رہی ہیں۔ پرانے تضادات کے بطن سے نئے تضادات کا جنم ہورہا ہے

0
0
0
s2smodern

ان انتخابات میں شیخ مجیب الرحمان نے واضح اکثریت حاصل کی لیکن اسے اقتدار سونپنے کی بجائے مغربی پاکستان کی جیل میں ڈال دیا گیا۔ ان ہتھکنڈوں سے طبقاتی بنیادوں پر ابھرنے والی انقلابی تحریک کو قومی بنیادوں پر زائل کرنے کی راہ مزید ہموار ہوئی۔ 

0
0
0
s2smodern