موت کے خوف کی لاچار گی
موت کے خوف کا وجود مزید ترقی کے آڑے آ رہا ہے اور اس کے ارتقا پر کڑے سوالات اٹھاتا ہے کہ ماضی کی جہالت اور اندھیرے آج بھی کیوں عام ہیں
موہنجو دڑو: تین روزہ نیشنل مارکسی یوتھ اسکول 2014ء
ملک کے طول و عرض سے 21 خواتین سمیت 223 کامریڈز کی شرکت نے اسکول کی کامیابی کو یقینی بنایا۔ اسکول مجموعی طور پر پانچ سیشنز پر مشتمل تھا
فیض کی وفات کے 30 سال
سیاست اور صحافت کے مختلف رجحانات آج فیض صاحب کی شاعری اور شخصیت کو بھی اپنے اپنے مفادات کیلئے استعمال کرنے میں مصروف ہیں
پہلی انٹر نیشنل کے قیام کے 150سال
لندن کے سینٹ مارٹن ہال میں جمع ہوئے۔ عالمی سطح پر محنت کش طبقے کی ہراول پرتوں کو جوڑنے کے لیے یہ اب تک کی سب سے سنجیدہ کوشش تھی۔ یہ اجلاس
بالشویک انقلاب 1917ء: آزادی کا راستہ آج بھی یہی ہے
دراصل ہر واقعہ انقلاب نہیں ہوتا اور انقلابات ہر جگہ اور ہر وقت وقوع پذیر نہیں ہو رہے ہوتے اور نہ ہی ہمیشہ انکی ضرورت محسوس کی جا رہی ہوتی ہے
کوبانی کی صورتحال پر عالمی مارکسی رجحان کا اعلامیہ
داعش کے جنگجو ترکی اور شام کی سرحد پر محصور قصبے کوبانی کے قریب ہو تے جارہے ہیں۔ ہزاروں خوفزدہ کُرد کمک اور رسد لانے کے لیے ترکی چلے گئے ہیں
اجرت میں اضافے کی لڑائی
محنت کشوں کے روز و شب کی تلخی کی کس کو فکر ہے۔ ہر روز زندگی مہنگی ہوجاتی ہے اور موت سستی۔ دوسری جانب حکمران طبقات محنت کشوں کے خو ن اور
شام: اسد کیوں جیت رہا ہے؟
گزشتہ ایک برس کے دوران شام میں طاقت کا توازن بہت بڑی حد تک اسد کے حق میں جا چکا ہے۔ حکومت کی وفادار فوج نے لبنان کی سرحد کے ساتھ پہاڑی علاقے پر پھر سے مکمل کنٹرول حاصل کر لیا ہے
مذہب کا سیاسی روپ
عالمی سطح پر جو نظریاتی اور سیاسی خلا پیدا ہوااس کا سب سے زیادہ فائدہ مذہبی سیاست اور بنیاد پرستی کے رجحانات نے اٹھایا۔ آج اسلام، یہودیت اور عیسائیت سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں بنیاد پرست گروہ
انسان کی موت کے خلاف قدرت سے جنگ http://www.chingaree.com/products/1387824374_minduniverse.jpg
بے شک انسان قدرت کی ہی بہترین تخلیق اور شہکار ہے لیکن اس کے باوجود انسان کی قدرت سے بہت پرانی جنگ ہے
مزید آرٹیکل
تلاش کریں
 
پیپلز پارٹی: ’’منزل‘‘ انہیں ملی جو شریک سفر نہ تھے!
پیپلزپارٹی کے نظریاتی بحران کوآج کل نیم حکیموں کے تجربات سے دور کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ پنجاب میں پاکستان پیپلز پارٹی کی انتخابات میں شکست
لاہور: ’’دہشتگردی کے محرکات‘‘ پر دوسرا سیمینار
تباہ حال معیشت، بڑھتی ہوئی بے روزگاری، انفراسٹرکچر کی بربادی، سماجی بیگانگی اور امید سے خالی مستقبل وہ معروضی حالات ہیں جن میں مذہبی بنیاد پرستی اور دہشت گردی پروان چڑھتی ہے
اوباما کی بھارت یاترا
ہندوستان کے حکمران اسے اپنی بہت بڑی کامیابی کے طور پر پیش کر رہے ہیں جبکہ پاکستان کے حکمران اور تجزیہ نگار اسے تشویش اور حسد سے دیکھ رہے ہیں
فوجی عدالتیں: دہشت سے وحشت کا علاج؟
اس ملک میں کبھی وہ سورج طلوع ہوگا جس کی روشنی میں کسی ایک یا بہت سے جرنیلوں اور آمروں کو عبرتناک سزائیں دی جائیں گی
کے این شاہ میں تعزیتی ریفرنس
مقررین نے کامریڈ راجہ کی انتھک جدوجہد کو سرخ سلام پیش کرتے ہوئے کہا کہ وہ ایک عاجز مگر پرعزم بالشویک تھے
فیصل آباد میں ایک روزہ مارکسی سکول
انہوں نے کہا کہ پاکستان اپنے جنم سے لے کرآج تک ایک ناکام سرمایہ دارانہ ریاست ثابت ہوئی ہے اور عوام کاایک مسئلہ بھی حل نہیں کرسکی
یونان: یورپ کی نئی امید؟
یورپ میں مذہب، قوم یا لسانیت کی بنیاد پر جنم لینے والے معمولی تنازعات کو سامراجی کارپوریٹ میڈیاخوب بڑھا چڑھا کر پیش کرتا ہے
مفاد پرستی اور بدلتے رشتے
ایک وقت تھا جب سفارش سے بڑے کام کروائے جاتے تھے۔ ان زمانوں میں منافع خوری کے لئے ذخیرہ اندوزی بھی ہوا کرتی تھی
کشمیر: آزادی چاہیے، مگر ووٹ بھی دیں گے
بھارتی مقبوضہ کشمیر میں ہونیوالے حالیہ ریاستی انتخابات میں کسی بھی سیاسی جماعت کو واضح اکثریت نہ مل سکنے کی وجہ سے حکومت سازی کے بحران نے ریاست کو گورنر راج
نظام زر میں ’’گڈ گورننس‘‘ ایک فریب
جعلی اعداد و شمار کی گردان سے بھوکا پیٹ بھرتا ہے نہ موٹر سائیکل کی ٹینکی۔ پٹرول کی بندش سے ایک کہرام مچا ہوا ہے
کتنی دہشت گردیوں سے لڑنا ہوگا؟
امریکی سامراج کا جھکاؤ واضح طور پر ہندوستان کے ’’مطالبات‘‘ کی طرف تھا جس کی وسیع و عریض منڈی کی اشد ضرورت امریکی ملٹی نیشنل اجارہ داریوں کو ہے
جیسے لوگ ویسے حکمران؟ :
ادھر دھرنے ختم ہوئے اور ساتھ ہی حکومت اپنے اصلی ایجنڈے پر واپس پہنچ گئی۔ ایسا بھی نہیں تھا کہ دھرنے کے دنوں میں انہوں نے عوام کو کوئی بہت زیادہ ریلیف
Lal Khan On TV Chanal 24

Mutbadil 24th January 2015 von ChannelTwentyFour
ہوم پیج
پاکستان
جنوبی ایشیا
یورپ
مشرق وسطی
لاطینی امریکہ
بین القوامیت
مزدور تحریک
مارکسی تعلیم
قومی تحریکیں
انقلابی کتابیں
نوجوانوں کی جنگ
عورت کی نجات
ادبی سنگت
آڈیو ویڈیو
آئی ایم ٹی سرگرمیاں
چنگاری فورم جرمنی
کالم ڈاکٹر لال خان
کالم ایڈیٹر

Marxist.com
PTUDC